21

راولپنڈی میں قاری نے 12 سالہ لڑکی کا گلا کاٹ دیا: پولیس

راولپنڈی: ایک قاری نے 12 سالہ لڑکی کا گلا کاٹ دیا جسے وہ راولپنڈی میں قرآن پڑھاتا تھا۔ اسے جیو نیوز نے منگل کو پولیس حکام کے حوالے سے رپورٹ کیا۔

یہ واقعہ رتہ امرال تھانے کی حدود میں محلہ چک مداد ویسٹریج کے علاقے میں پیش آیا۔

پولیس کے مطابق ایبٹ آباد کا 21 سالہ عادل مقتولہ کے گھر قرآن پڑھانے جاتا تھا۔ اس وحشیانہ واقعے سے ایک روز قبل مقتولہ نے اپنے والدین سے عادل کے نامناسب رویے کی شکایت کی تھی اور انھوں نے عادل کو اسے پڑھانے سے روک دیا تھا۔

پولیس نے بتایا کہ پیر کے روز، لڑکی اپنے پڑوس کے ٹیوشن سنٹر گئی، جہاں عادل اس کے پاس پہنچا اور بے دردی سے اس کا گلا کاٹ کر اسے قتل کر دیا۔

جرم کی اطلاع ملتے ہی پولیس جائے وقوعہ پر پہنچی، شواہد اکٹھے کیے، اور نابالغ کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے اسپتال منتقل کیا۔

پولیس نے ملزم کو گرفتار کر لیا ہے اور اس کے خلاف ایف آئی آر درج کر لی ہے۔

پولیس کے مطابق عادل نے ابتدائی تفتیش کے دوران اعتراف کیا کہ لڑکی کے گھر والوں کو اس پر شک تھا جس کی وجہ سے اس نے یہ گھناؤنا جرم کیا۔

پولیس نے مقتول کے والد زاہد نصیر کی مدعیت میں درج ایف آئی آر کے بعد تفتیش شروع کر دی ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کمسن بچی کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے متعلقہ حکام سے تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں