23

مشرقی افریقہ کا کے شہر دارالسلام سے ممبئی آنے والی ڈائریکٹ فلائٹ کروڑوں روپیہ کے خسارے میں ۔ مولانا حسن علی راجانی کا انکشاف

نئی دہلی ، 26 اپریل / مولانا حسن علی راجانی نے افریقہ کے ایک ملک تانزانیہ کی راجدھانی دارالسلام میں محسن ہیمانی سے بھارت کے سلسلہ میں تبادلہ خیال بذریعہ فون کیا جس میں محسن ہیمانی نے کہا کہ ہمارے یہاں کے مشرقی افریقہ کے جو لوگ اکثرو بیشتر ہندوستان آتے تھے وہ مارے ڈر کے اب ہندوستان کا نام نہیں لے رہے ہیکہ ہندوستان میں جاتے ہی 14 دن کیلئے کورن ٹائم میں ڈال کر من مانے پیسے وصول کرتے ہیں جس سے اب لوگ ہندوستان کے بجائے اب چائینا جاپان دوبئی اور لندن چلے جاتے ہیں ۔ جب کہ ہندوستان کہ مقابلہ میں یہ سارے ممالک بہت مینگھے پڑتے ہیں لیکن وہاں کسی قسم کی کوئی پریشانی نہیں ہیں مزید محسن ہیمانی نے بتایا کہ ھفتہ میں دارالسلام سے ممبئی جو تین فلائٹ ڈائریکٹ ایر تانزانیہ نے شروع کردی ہے ۔ وہ ایر لائنس بھی کروڑوں روپیہ کے خسارے میں چل رہی ہے ۔ مولانا حسن علی راجانی نے کہا کہ بھارت کے سلسلہ میں فقط مشرقی افریقہ ہی نہیں بلکہ بہت سے ممالک میں افواہ پھیلی ہوئی ہیں جو وہاں کے انڈین ایمبیسیڈر کی ذمہ داری بنتی ہیکہ وہ شکایتوں کو سنے اور اسے انصاف دلائے اور ایک پریس نوٹ جاری کریں کہ ہندوستان میں بیرونی ممالک کے لوگوں کیلئے کوئی دقت نہیں ہے ۔ مولانا حسن علی راجانی نے مزید کہا کہ اب تو شارجہ سے سرینگر کی بھی ڈایریکٹ فلائٹ ہو گئی ہیں تو کشمیر تک آنے جانے میں کوئی پریشانی نہیں ہے اور ہمارے ملک ہندوستان کے حالات بہت اچھے اور بہتر ہے اور کوئی بھی ایسی افواہ نہ پھیلائیں جس سے دنیا میں کسی کا بھی کوئی ذرہ برابر نقصان ہوتا ہوں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں