17

50 فیصد پاکستانی سمجھتے ہیں کہ اگلا وزیر اعظم شہباز کو نہیں مریم نواز کو ہونا چاہیے، مفتاح اسماعیل

  • مفتاح اسماعیل کا دعویٰ ہے کہ اسٹیبلشمنٹ اور موجودہ حکومت ایک پیج پر نہیں ہیں۔
  • سابق وزیر کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی اور پی پی پی دونوں نااہل ہیں، لیکن پی ٹی آئی “سب سے زیادہ نااہل” ہے۔
  • کہتے ہیں نواز شریف اب پاکستان واپس نہ آئیں۔

مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اور سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل نے کہا کہ پاکستان کے آدھے عوام سمجھتے ہیں کہ اگلی وزیر اعظم مریم نواز کو ہونا چاہیے نہ کہ شہباز شریف کو۔

پر خطاب کرتے ہوئے جیو نیوز پروگرام جشنِ کرکٹمسلم لیگ ن کے رہنما کا کہنا تھا کہ آج کل محمد رضوان ان کے پسندیدہ کھلاڑی ہیں اور وہ ہر اس ٹیم کو سپورٹ کریں گے جس کے لیے رضوان کھیلے گا۔

حماد اظہر کی بطور وفاقی وزیر توانائی کی کارکردگی پر تبصرہ کرتے ہوئے اسماعیل نے کہا کہ ملک کو گیس کی قلت کا سامنا ہے اور وہ جب بھی یہ کہتے ہیں تو اظہر غصے میں آجاتے ہیں۔ حماد اظہر کرپٹ نہیں لیکن ان کی کارکردگی اچھی نہیں ہے۔

مسلم لیگ (ن) کے رہنما نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ وزیراعظم عمران خان اپنی مدت پوری کرنے والے نہیں، انہوں نے مزید کہا کہ ’’اسٹیبلشمنٹ اور موجودہ حکومت ایک پیج پر نہیں ہیں۔‘‘

نواز شریف کے بارے میں بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ این ایس کرپٹ شخص نہیں ہے۔ اس کے بجائے، اسماعیل نے کہا، نواز لوگوں پر خرچ کرتا ہے۔ ان کا موقف تھا کہ نواز شریف کو اب وطن واپس نہیں آنا چاہیے۔

سابق وزیر خزانہ کا مزید کہنا تھا کہ پی ٹی آئی اور پیپلز پارٹی دونوں نااہل ہیں لیکن پی ٹی آئی ’سب سے زیادہ نااہل‘ ہے۔

مسلم لیگ ن کے رہنما کا کہنا تھا کہ ملک کے 50 فیصد لوگ سمجھتے ہیں کہ شہباز شریف کی بجائے مریم نواز کو اگلی وزیر اعظم ہونا چاہیے۔

اسماعیل نے یہ بھی ریمارکس دیئے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما کیپٹن (ر) صفدر کو مزار قائد پر نعرے نہیں لگانے چاہیے تھے۔

.

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں