30

کراچی کے سپر اسٹور میں آگ لگنے سے ایک شخص جاں بحق ہوگیا۔

یکم جون 2022 کو کراچی کے ایک سپر اسٹور میں آگ لگنے کے بعد اٹھتے دھوئیں کا منظر۔ — آن لائن
یکم جون 2022 کو کراچی کے ایک سپر اسٹور میں آگ لگنے کے بعد اٹھتے دھوئیں کا منظر۔ — آن لائن
  • سپر سٹور کے گودام میں صبح 11 بجے آگ لگ گئی۔
  • سپر سٹور جیل چورنگی پر واقع ہے جو ایک مصروف سڑک ہے۔
  • کئی گھنٹے گزرنے کے باوجود آگ پر قابو نہیں پایا جا سکا۔

کراچی: جیل چورنگی پر واقع ایک سپر مارکیٹ میں بدھ کی دوپہر لگنے والی بڑی آگ گزشتہ 12 گھنٹوں سے جاری مسلسل کوششوں کے باوجود ابھی تک بجھائی نہیں جا سکی ہے۔

حکام نے بتایا کہ آگ جیل چورنگی پر واقع سپر سٹور کے گودام میں صبح 11 بجے لگی جو کہ ایک انتہائی مصروف سڑک ہے۔ سپر اسٹور ایک کثیر المنزلہ عمارت میں واقع ہے اور ہر روز بہت زیادہ لوگ آتے ہیں۔ آگ سے نکلنے والے گہرے دھوئیں نے علاقے کو اپنی لپیٹ میں لے لیا جس سے آس پاس کے لوگوں کو سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا۔

آگ لگتے ہی ایک شخص جسے بچا کر قریبی اسپتال منتقل کیا گیا وہ جان کی بازی ہار گیا۔ اس دوران دو فائر فائٹرز سمیت چار افراد کی موت ہو گئی۔

تاہم، مسلسل کوششوں اور 18 سے زائد فائر بریگیڈ جائے وقوعہ پر موجود ہونے کے باوجود آگ پر قابو نہیں پایا جاسکا ہے۔

فائر بریگیڈ حکام کے مطابق آگ کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کوششیں جاری ہیں، اس دوران آگ پر قابو پانے کا عمل بعد میں شروع کیا جائے گا۔

وجوہات پر تبصرہ کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آگ بجھانے کے عملے کو دھویں کی شدت اور ہوا کی کمی کے باعث آگ بجھانے میں دشواری کا سامنا ہے۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ فائر بریگیڈ کے ساتھ پاک بحریہ کے فائر ٹینڈر بھی آگ پر قابو پانے کی کوشش کر رہے ہیں۔

دریں اثنا، پانی کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے واٹر بورڈ ہائیڈرنٹس پر ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے۔

عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ سپر سٹور انتظامیہ نے اپنے ذرائع سے آگ بجھانے کی کوشش نہیں کی بلکہ سٹور سے باہر نکل کر کھڑے ہونے کا انتخاب کیا۔

فائر حکام کا یہ بھی کہنا تھا کہ اگر انتظامیہ آگ بجھانے کا سامان اسٹور میں رکھتی تو پہلے مرحلے میں آگ پر قابو پایا جاسکتا تھا۔

پولیس حکام کا کہنا ہے کہ امدادی کارکن رہائشی عمارت کے تمام مکینوں کو نکالنے میں کامیاب ہو گئے ہیں۔ علاوہ ازیں سپر مارکیٹ کی عمارت کے اردگرد کی عمارتیں بھی خالی کرا لی گئیں۔

اسسٹنٹ کمشنر عاصمہ بتول نے بتایا کہ متاثرہ عمارت کو خطرے سے دوچار قرار دے دیا گیا ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں