17

پاکستان چین کی مدد سے سیمی کنڈکٹرز زون بنانے کا خواہاں ہے۔

وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین کا کہنا ہے کہ پاکستان چین کی مدد سے سیمی کنڈکٹرز زون بنانے کا خواہاں ہے تاکہ ملک کو جدید آلات میں خود کفیل بنایا جا سکے اور ترقی کی نئی راہیں کھلیں۔

چائنہ اکنامک نیٹ کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنے حالیہ دورہ چین کے دوران سیمی کنڈکٹرز کی صنعت کو پاکستان منتقل کرنے پر بات کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ ٹیکنالوجی نہ صرف پاکستان بلکہ چین کے لیے بھی بہت اہم ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیمی کنڈکٹر ہر ٹیکنالوجی کا بنیادی عنصر ہے جس سے مقامی مینوفیکچرنگ مصنوعات میں ویلیو ایڈیشن لانے میں مدد ملے گی۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان چاہتا ہے کہ چینی ٹیک کمپنیاں پاکستان آئیں اور اسے سیمی کنڈکٹرز کی تیاری کا مرکز بنائیں۔

انہوں نے اس بات پر خوشی کا اظہار کیا کہ چینی سرمایہ کار پاکستان کے ساتھ ہاتھ ملانے کے بہت خواہش مند ہیں اور ٹیکنالوجی زون کو سیمی کنڈکٹرز زون میں تبدیل کیا جائے گا۔

چوہدری فواد حسین نے کہا کہ پاکستان اور چین دونوں سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں بے پناہ تعاون کر سکتے ہیں۔

انہوں نے نشاندہی کی کہ اب پاکستان میں موبائل فونز اسمبل ہو چکے ہیں لیکن وہ ایک قدم آگے بڑھ کر ملک میں موبائل فونز کی مکمل مینوفیکچرنگ شروع کرنا چاہیں گے۔

.

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں