19

وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کے ساتھ عوام سے عوام کے روابط کو مضبوط کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نائف بن عبدالعزیز آل سعود (ایل) نے 7 فروری 2022 کو اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی۔
وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نائف بن عبدالعزیز آل سعود (ایل) نے 7 فروری 2022 کو اسلام آباد میں وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی۔
  • وزیراعظم عمران خان نے امید ظاہر کی ہے کہ سعودی عرب میں قید پاکستانیوں کو پاکستان واپس بھیج دیا جائے گا۔
  • اسلامی اتحاد کے فروغ میں عبدالعزیز آل سعود کے قائدانہ کردار کی تعریف کی۔
  • پاکستان کے لیے حالیہ مالیاتی بجٹ سپورٹ کے لیے سعودی قیادت کو سراہا۔

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے پیر کو عوام سے عوام کے روابط کو مزید مضبوط بنانے کی ضرورت پر زور دیا، یہ بات وزیراعظم کے دفتر سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے۔

سعودی عرب کے وزیر داخلہ شہزادہ عبدالعزیز بن سعود بن نائف بن عبدالعزیز السعود سے ملاقات کے دوران وزیراعظم عمران خان نے دونوں ممالک کے درمیان مجرموں کی منتقلی کے معاہدے کے اختتام کو نوٹ کیا۔

وزیراعظم نے امید ظاہر کی کہ اس فریم ورک کے ذریعے سعودی عرب میں قید پاکستانیوں کی بڑی تعداد کو پاکستان واپس بھیجا جائے گا۔

مزید پڑھ: پاکستان اور سعودی عرب نے وزارت داخلہ کے درمیان بہتر رابطے کا عزم کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے اسلامی اتحاد کو فروغ دینے میں خادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود کے قائدانہ کردار کی تعریف کی اور خطے اور اس سے باہر امن و سلامتی کے لیے سعودی عرب کی کوششوں کو سراہا۔

انہوں نے سعودی عرب کی ترقی اور خوشحالی کے لیے شہزادہ محمد بن سلمان کے وژن اور پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان پائیدار برادرانہ تعلقات میں ان کے انمول کردار کو بھی سراہا۔

وزیر اعظم عمران خان نے خاص طور پر “مشکل وقتوں میں” پاکستان کے ساتھ ثابت قدمی پر مملکت کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے حال ہی میں پاکستان کو دی جانے والی مالیاتی بجٹ سپورٹ پر سعودی قیادت کا شکریہ ادا کیا۔

مزید پڑھ: پاکستان کو سعودی عرب سے 3 ارب ڈالر کی امداد ملتی ہے۔

سعودی عرب پر حوثی ملیشیا کے حملوں کی مذمت کرتے ہوئے وزیراعظم نے مملکت کی سلامتی، خودمختاری اور علاقائی سالمیت کے لیے پاکستان کی مکمل حمایت کا اعادہ کیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے شہزادہ عبدالعزیز نے وزیراعظم کو ولی عہد کی جانب سے تہنیتی تہنیتی پیغام پہنچایا اور پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان قریبی برادرانہ تعلقات کا اعادہ کیا۔

انہوں نے مملکت کی ترقی میں پاکستانیوں کے مثبت کردار کا بھی اعتراف کیا اور اپنی وزارت سے متعلق تمام معاملات پر پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

بیان میں مزید کہا گیا کہ “پاکستان اور سعودی عرب ایک برادرانہ رشتے میں بندھے ہیں جو باہمی اعتماد اور افہام و تفہیم، قریبی تعاون اور ایک دوسرے کا ساتھ دینے کی لازوال روایت پر مشتمل ہے۔”

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں