14

مراکشی بچے ریان کی موت نے دنیا کے لوگوں کے منتظرین کی سانسیں روک دی , مولانا راجانی حسن علی کا اظہار افسوس

نئی دہلی / مورخہ 7 فروری / مولانا راجانی حسن علی نی مراکش میں پانچ سالہ بچے ریّان کی موت پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ریان پانچ روز قبل 32 میٹر گہرے کنوئیں میں گر گئے تھے۔ مولانا راجانی نے کہا کہ پوری دنیا کے میڈیا نے مراکش کے حکام کی تعریف کی ہے اور کہا کہ حکام مراکش نے بہت جواں مردی کا کام کیا اور چار دن تک یزاروں لوگوں کے ہمراہ سیکڑوں بل دوزر سے کنویں کی پوری اطراف زمین کو اکھاڑ کر پغیک دیا اور بچے کو زندہ تو نکال لیا جس سے پوری دنیا میں اس بچے کے منتظرین نے ٹھنڈی سانس تو لے لیں لیکن دس منٹ کے بعد ہی جب ایوان شاہی سے خبر آئی کے بچہ فوت ہو گیا تو پوری دنیا کے منتظرین کی سانس رک گئیں ۔ اور یہ خبر میڈیا کے ذریعہ پھیلتے ہی دنیا میں لوگوں کی آنکھیں اشکبار ہونے لگیں ۔ بچوں کی آسیں ٹوٹ گئیں ۔ خدا ریان کو جنت میں اعلی مقام عنایت فرمائیں اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا کریں ساتھ ہی ساتھ مولانا راحانی نے ہندوستان کی گلوکارہ لتا منگیشکر کے نیدھن پر بھی اظہار افسوس کرتے ہوئے کہا کہ لتا منگیشکر صآحبہ نے امام حسین ع پر پڑنے والی مصیبتوں پر بہت مرثیہ پڑھا ۔ اور خدا کسی کے اجر کو ضاٙئع نہیں کرتا ۔ بھگوان لتا منگیشکر کی آتمہ کو شانتی دیں

From New Delhi Hasan Bhai -919998269850

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں