14

فخر زمان اور باؤلرز کی مدد سے لاہور قلندرز نے پشاور زلمی کو 29 رنز سے شکست دیدی

فخر زمان اور باؤلرز نے مل کر لاہور قلندرز کو میچ نمبر نو میں پشاور زلمی کو 29 رنز سے شکست دے کر اپنی ٹیم کو جاری پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کے پوائنٹس ٹیبل میں دوسرے نمبر پر پہنچانے میں مدد کی۔

قلندرز نے پشاور کو 200 رنز کا ہدف دیا تھا جب وہاب ریاض نے لاہور کے خلاف پہلے بولنگ کا انتخاب کیا۔

پشاور کی اننگز کے آغاز میں لاہور کے کپتان شاہین شاہ آفریدی نے اننگز کی تیسری گیند پر زلمی کے اوپنر حضرت اللہ زازئی کو صفر پر آؤٹ کر کے اپنی ٹیم کے لیے رونق قائم کی۔

ابتدائی وکٹ کے نقصان نے زلمی کو بیک فٹ پر ڈال دیا اور لاہور کی باقاعدہ وکٹوں نے پشاور کو کبھی کھیل پر قابو نہیں پانے دیا۔

زلمی کی جانب سے کامران اکمل اور حیدر علی نے بالترتیب 41 اور 49 رنز بنائے لیکن ٹیم مطلوبہ رن ریٹ تک پہنچنے میں ناکام رہی۔

لاہور کی جانب سے زمان خان نے تین جبکہ کپتان شاہین اور ڈیوڈ ویز نے دو دو وکٹیں حاصل کیں۔ راشد خان نے بھی ایک وکٹ حاصل کی۔

زلمی نے اپنے 20 اوورز کا اختتام 170-9 کے ساتھ کیا جس کی مدد سے لاہور کو 29 رنز سے فتح حاصل ہوئی۔ اگر ڈیوڈ ویز کی ہیٹرک وکٹ ریویو کے ذریعے نہ الٹ دی جاتی تو پشاور آخری اوور میں آل آؤٹ ہو چکا ہوتا۔

اس سے قبل، لاہور کے اوپنرز فخر زمان اور عبداللہ شفیق نے قلندرز کی بیٹنگ کے لیے لہجہ قائم کیا جب انہوں نے پشاور زلمی کے بولرز کو کلینرز تک پہنچا دیا۔

فخر نے 10ویں اوور میں اپنی نصف سنچری مکمل کر کے لگاتار تیسرا پچاس پلس سکور بنایا۔ تاہم اسی اوور میں عثمان قادر نے شفیق کو 41 رنز پر آؤٹ کر کے ابتدائی اسٹینڈ کو توڑ دیا۔

فخر نے زلمی کے گیند بازوں پر حملہ جاری رکھا اس سے پہلے کہ وہ 13ویں اوور میں حسین طلعت کے ہاتھوں 66 کے سکور پر آؤٹ ہو گئے۔ بائیں ہاتھ کے کھلاڑی کے آؤٹ ہونے تک انہوں نے اپنی ٹیم کو پشاور کے لیے ایک بڑا ہدف قائم کرنے کا پلیٹ فارم فراہم کر دیا تھا۔

اگلے چند اوورز میں، کامران غلام، محمد حفیظ، اور راشد خان کے کیمیو نے لاہور کو اپنی اننگز 199-4 پر ختم کرنے پر مجبور کیا۔

پشاور کی جانب سے سلمان ارشاد نے دو جبکہ عثمان قادر اور حسین طلعت نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

.

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں