13

فالو اپ کلیئرنس آپریشن میں تین دہشت گرد مارے گئے۔

پاکستانی فوج کے کچھ سپاہیوں کی تصویر — ispr.gov.pk
پاکستانی فوج کے کچھ سپاہیوں کی تصویر — ispr.gov.pk
  • تین میں سے دو دہشت گرد “ہائی ویلیو ٹارگٹ” تھے۔
  • کیچ کے علاقے بالگتر میں کلیئرنس آپریشن کیا گیا۔
  • ٹھکانے سے اسلحہ اور گولہ بارود کا ذخیرہ بھی برآمد ہوا ہے۔

بلگتر: دہشت گرد کے تناظر میں سیکورٹی فورسز کی طرف سے کئے گئے “فالو اپ کلیئرنس آپریشن” میں دو ہائی ویلیو اہداف سمیت تین دہشت گرد مارے گئے۔ حملہ پنجگور میں، انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) نے جمعہ کو ایک بیان میں کہا۔

آپریشن کے دوران، پنجگور میں حالیہ دہشت گردانہ سرگرمیوں سے منسلک دہشت گردوں کے ایک عارضی ٹھکانے کو سیکورٹی فورسز نے نشانہ بنایا،” فوج کے میڈیا ونگ نے کہا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ سیکیورٹی فورسز کو “بڑی انٹیلی جنس اطلاع” ملنے کے بعد دہشت گردوں کے ٹھکانے کو گھیرے میں لے لیا گیا۔

بیان میں کہا گیا، ’’سیکورٹی فورسز نے دہشت گردوں کے ٹھکانے کو گھیرے میں لے لیا اور شدید فائرنگ کے تبادلے کے دوران وہاں چھپے تینوں دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔‘‘ اس نے بتایا کہ ٹھکانے سے اسلحہ اور گولہ بارود کا ایک ذخیرہ بھی برآمد کیا گیا ہے۔

مزید پڑھ: وزیراعظم عمران خان نے بلوچستان میں دہشت گردانہ حملے پسپا کرنے پر سیکیورٹی فورسز کو سلام پیش کیا۔

آئی ایس پی آر نے مارے گئے دہشت گردوں کی شناخت کمانڈر سمیر عرف بحر، الطاف عرف لالک اور پھلان بلوچ کے نام سے کی۔ مارے گئے دہشت گرد بلوچستان کے ہوشاب، پنجگور اور دیگر علاقوں میں سیکیورٹی فورسز کے خلاف دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث تھے۔

سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان میں حملے ناکام بناتے ہوئے 13 دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا۔

ایک روز قبل، آئی ایس پی آر نے کہا تھا کہ بدھ کی رات بلوچستان میں سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان مقابلے کے دوران مجموعی طور پر 13 دہشت گرد ہلاک اور 7 جوان شہید ہوئے۔

سیکیورٹی فورسز نے بلوچستان میں اپنے کیمپوں پر دہشت گردانہ حملوں کو ناکام بنا دیا تھا، ابتدائی طور پر بدھ کی شام چار دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا تھا۔

فوج کے میڈیا ونگ نے کہا کہ سیکیورٹی فورسز نے حملوں کو پسپا کرنے کے بعد بدھ کی رات بلوچستان کے بیان کردہ علاقوں میں چھپے ہوئے مزید دہشت گردوں کی تلاش کے لیے کلیئرنس آپریشن کیا۔

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ نوشکی میں سیکیورٹی فورسز نے مزید 5 دہشت گردوں کو مار گرایا جس سے علاقے میں مارے جانے والے دہشت گردوں کی تعداد 9 ہوگئی جب کہ مقابلے میں 4 جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔

مزید پڑھ: بلوچستان میں دہشت گردانہ حملوں کے بعد انٹیلی جنس ایجنسیوں، ایل ای اے کو الرٹ رہنے کا حکم

دریں اثناء پنجگور میں بھی علاقے میں موجود دہشت گردوں کے خاتمے کے لیے آپریشن جاری ہے جس میں چار دہشت گرد ہلاک اور چار سے پانچ کو سیکیورٹی فورسز نے گھیرے میں لے لیا۔

پنجگور میں فائرنگ سے 3 فوجی شہید اور 4 زخمی ہوگئے۔

آئی ایس پی آر کا مزید کہنا تھا کہ ابتدائی تحقیقات سے پتہ چلتا ہے کہ دہشت گردوں کے بھارت اور افغانستان میں روابط تھے۔ انٹیلی جنس ایجنسیوں نے دہشت گردوں اور ان کے ہینڈلرز کی کمیونیکیشن کو روک لیا ہے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں