22

عدالت نے غداری کیس میں کیپٹن (ر) صفدر اور ایم پی اے عمران خالد پر فرد جرم عائد کردی

کیپٹن (ر) محمد صفدر۔  - ٹویٹر
کیپٹن (ر) محمد صفدر۔ – ٹویٹر
  • عدالت نے ایم پی اے عمران خالد بٹ پر بھی فرد جرم عائد کردی۔
  • صفدر پر ریاستی اداروں کے خلاف ’تضحیک آمیز ریمارکس‘ دینے کا الزام تھا۔
  • ان پر لاہور میں بغاوت کا مقدمہ بھی درج ہے۔

گوجرانوالہ: ہفتہ کو گوجرانوالہ کی عدالت نے قومی اداروں کے خلاف توہین آمیز ریمارکس کرنے کے الزام میں غداری کیس میں کیپٹن (ر) محمد صفدر اور ایم پی اے عمران خالد بٹ پر فرد جرم عائد کردی۔

کیس کی سماعت جوڈیشل مجسٹریٹ محمد اعظم نے کی جنہوں نے صفدر اور خالد پر بغاوت کا الزام عائد کیا۔

گوجرانوالہ کے سیٹلائٹ تھانے میں صفدر کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا۔ اس مقدمے میں نامزد ایم پی اے خالد کی رہائش گاہ پر میٹنگ کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان پر ریاستی اداروں کے خلاف ’تضحیک آمیز ریمارکس‘ دینے کا الزام تھا۔

عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد مسلم لیگ ن کے دونوں ارکان پر فرد جرم عائد کردی۔

عدالت نے کیس کی سماعت 20 جون تک ملتوی کر دی۔

دریں اثناء صفدر پر لاہور کی ضلعی عدالت میں غداری کے ایک اور مقدمے میں بھی فرد جرم عائد کر دی گئی ہے۔ ملزم نے الزامات کی تردید کی۔

عدالت نے گواہوں کو 10 جون کو طلب کر لیا۔ صفدر کے خلاف اسلام پورہ تھانے میں توہین آمیز تقاریر کرنے پر مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

نواز شریف کے داماد صفدر نے کہا کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کے خلاف فوج اور ریاست کو نشانہ بنانے کا مقدمہ درج ہونا چاہیے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے سماعت کے بعد صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ اصل مقدمہ سابق چیف جسٹس آف پاکستان ثاقب نثار اور مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) کے خلاف ہونا چاہیے۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں