14

سپریم کورٹ نے کے پی کے بلدیاتی انتخابات ملتوی کرنے کا پی ایچ سی کا فیصلہ معطل کر دیا۔

سپریم کورٹ نے بدھ کو خیبرپختونخوا (کے پی) میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ ملتوی کرنے سے متعلق پشاور ہائی کورٹ (پی ایچ سی) کا فیصلہ معطل کردیا۔

سماعت کے دوران الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ پی ایچ سی نے کمیشن کے دلائل سنے بغیر انتخابات کا شیڈول موخر کر دیا۔

اس دوران جسٹس عائشہ ملک نے ریمارکس دیئے کہ ہائی کورٹ کو فیصلہ سنانے سے پہلے الیکشن کمیشن کا موقف سننا چاہیے تھا۔

4 فروری 2022 کو پی ایچ سی نے کے پی میں بلدیاتی انتخابات کا دوسرا مرحلہ ملتوی کر دیا تھا جو 27 مارچ کو ہونا تھا۔

ایبٹ آباد رجسٹری میں سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیئے کہ شدید برف باری کے باعث لوگوں کو ووٹ ڈالنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔ جج نے ہدایت کی کہ ضلعی حکومت رمضان کے بعد بلدیاتی انتخابات کی تاریخ کا از سر نو بندوبست کرے۔

واضح رہے کہ کوہستان اور ناران کے نمائندوں نے موسم کی خرابی کے باعث انتخابات ملتوی کرنے کی درخواست دائر کی تھی۔

سابقہ ​​شیڈول کے مطابق امیدوار 7 سے 11 فروری تک کاغذات نامزدگی جمع کراسکتے ہیں، کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال 14 سے 16 فروری تک کی جائے گی۔

الیکشن لڑنے والے امیدواروں کو انتخابی نشانات 28 فروری کو الاٹ کیے جائیں گے۔

اس سے قبل دسمبر 2021 میں، پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کو اقتدار میں ہونے کے باوجود ایک بڑا دھچکا لگا کیونکہ جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی-ایف) کے امیدوار زبیر علی نے کے پی ایل جی الیکشن کے پہلے مرحلے میں رضوان خان بنگش کو شکست دی۔

نتائج کے مطابق جے یو آئی (ف) کے امیدوار نے 62 ہزار 388 ووٹ حاصل کیے جب کہ پی ٹی آئی کے رضوان بنگش صرف 50 ہزار 659 ووٹ لے سکے۔

.

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں