13

جرائم بے قابو ہونے پر غلام نبی میمن کو دوبارہ کراچی پولیس چیف تعینات کر دیا گیا۔

کراچی پولیس کے سربراہ آئی جی غلام نبی میمن۔  تصویر: فائل
کراچی پولیس کے سربراہ آئی جی غلام نبی میمن۔ تصویر: فائل

ملک کے سب سے بڑے میٹروپولیٹن ایریا میں اسٹریٹ کرائم کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کے پیش نظر سندھ حکومت نے جمعہ کو کراچی کے سابق پولیس چیف غلام نبی میمن کو دوبارہ اس عہدے پر تعینات کر دیا ہے۔ خبر اطلاع دی

حکام نے بتایا کہ چند روز قبل وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈپارٹمنٹ (سی ٹی ڈی) کو دوبارہ فعال کرنے اور اسٹریٹ کرائم میں اضافے سمیت پولیسنگ سے متعلق متعدد امور کا تفصیلی جائزہ لیا گیا تھا۔ اجلاس میں میمن کو دوبارہ کراچی کا پولیس چیف مقرر کرنے پر اتفاق کیا گیا کیونکہ اس کا خیال تھا کہ شہر کے ایڈیشنل آئی جی کی حیثیت سے ان کے دور میں امن و امان بحال ہوا تھا۔

اس سلسلے میں سندھ کے چیف سیکریٹری نے جمعہ کو ایک نوٹیفکیشن جاری کرتے ہوئے کراچی میں مقیم ایڈیشنل آئی جیز بشمول کراچی پولیس چیف کے تبادلے اور تقرریوں کا اعلان کیا۔ حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ ایڈیشنل آئی جی غلام نبی میمن، جو پولیس سروس آف پاکستان (BS-21) کے افسر تھے، جو اس سے قبل اسپیشل برانچ کے ایڈیشنل آئی جی کے طور پر تفویض کیے گئے تھے، کو فوری طور پر کراچی پولیس کا ایڈیشنل آئی جی مقرر کیا گیا ہے، ان کی جگہ ایڈیشنل آئی جی عمران یعقوب منہاس کو تعینات کیا گیا ہے۔ .

ایڈیشنل آئی جی منہاس کو کراچی پولیس چیف کے عہدے سے تبدیل کرکے ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی لگا دیا گیا۔ دریں اثناء ایڈیشنل آئی جی جاوید اختر اوڈھو جو بطور ریسرچ اینڈ ڈویلپمنٹ ایڈیشنل آئی جی خدمات انجام دے رہے تھے کو تبدیل کر کے میمن کی جگہ سپیشل برانچ کا ایڈیشنل آئی جی تعینات کر دیا گیا۔

نئے تعینات ہونے والے ایڈیشنل آئی جی کراچی ایک تجربہ کار افسر ہیں جو اہم عہدوں پر کام کر چکے ہیں۔ گزشتہ 10 سالوں کے دوران انہوں نے انٹیلی جنس بیورو (IB) میں کئی اہم عہدوں پر بھی خدمات انجام دیں۔ 2019 میں انہیں کراچی پولیس چیف مقرر کیا گیا۔

اس سے قبل وہ ایس ایس پی ملیر، ڈسٹرکٹ لاڑکانہ کے ایس ایس پی، اے ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ کراچی، وزیراعلیٰ سندھ کے ایڈیشنل سیکریٹری، ڈائریکٹر انکوائریز، اینٹی کرپشن اسٹیبلشمنٹ سندھ، اے ڈی آئی جی آپریشنز کراچی، ڈی پی او حیدرآباد، ڈی آئی جی ساؤتھ رینج اور ڈی آئی جی ہیڈ کوارٹرز کے طور پر خدمات انجام دے چکے ہیں۔ سینٹرل پولیس آفس کراچی۔

سے خطاب کر رہے ہیں۔ خبرایڈیشنل آئی جی میمن نے کہا کہ ان کی ترجیحات میں شہر میں اسٹریٹ کرائم کی لعنت پر قابو پانا اور ہر شہری کی عزت نفس کو یقینی بنانا شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ عام طور پر شہریوں کو شکایات کے اندراج میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے اور جب ان کی شکایات درج کی جاتی ہیں تو اکثر کوئی نتیجہ نہیں نکلتا۔

انہوں نے کہا کہ وہ پولیس کی ایک اچھی تصویر بنانے میں مدد کے لیے ایک طریقہ کار بنانا چاہتے ہیں تاکہ شہری اپنی شکایات کے اندراج کے لیے تھانوں سے رجوع کرنے میں ہچکچاہٹ محسوس نہ کریں۔ نئے سٹی پولیس چیف نے یہ بھی کہا کہ وہ شہر میں ماڈل پولیس سٹیشنز کو بحال کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ عام لوگوں سے ملاقات کریں گے اور ان کے مسائل سنیں گے۔ اس کے علاوہ، وہ تفتیشی شاخ میں تبدیلیاں کرنا چاہتا ہے کیونکہ اگر محکمہ تفتیش کمزور ہے تو مقدمات کی اچھی طرح سے پیروی نہیں ہو سکے گی، جس سے مجرموں کو مدد ملے گی۔

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں