24

بلوچستان کے بلدیاتی انتخابات میں آزاد امیدواروں کو برتری حاصل ہے۔

غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق اتوار کو بلوچستان کے 32 اضلاع میں ہونے والے لوکل گورنمنٹ (ایل جی) کے انتخابات میں آزاد امیدواروں کو برتری حاصل ہے۔

کل 5,345 وارڈوں میں سے 1,426 وارڈوں کے غیر سرکاری نتائج کے مطابق آزاد امیدواروں نے 1,058 نشستیں حاصل کی ہیں۔ جمعیت علمائے اسلام (جے یو آئی) 122 نشستوں کے ساتھ دوسرے اور بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) 77 نشستوں کے ساتھ تیسرے نمبر پر رہی۔

بلوچستان نیشنل پارٹی نے 77 اور نیشنل پارٹی (این پی) نے 26 نشستیں حاصل کیں۔

قبل ازیں بلدیاتی انتخابات کے لیے پولنگ صبح 8 بجے شروع ہوئی جو شام 5 بجے تک بغیر کسی وقفے کے جاری رہی اور باقی دو اضلاع کوئٹہ اور لسبیلہ میں انتخابی شیڈول کا اعلان بعد میں کیا جائے گا کیونکہ صوبائی حکومت نے حلقوں کی تعداد میں اضافہ کردیا ہے جبکہ حلقہ بندیاں وہاں حد بندی کی جا رہی ہے۔

ای سی پی کے مطابق 32 اضلاع میں 5 ہزار 226 پولنگ اسٹیشنز ہیں جن میں سے 2 ہزار 54 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس اور 1 ہزار 974 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ الیکشن میں 16 ہزار 195 امیدوار میدان میں ہیں جن میں سے 102 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہو گئے ہیں جبکہ پولنگ سٹیشنز پر پولیس، لیویز اور ایف سی کے اہلکار تعینات تھے۔

سوراب سمیت سبی، ڈیرہ بگٹی، پشین، بارکھان، چاغی، قلات اور ژوب میں بھی پولنگ ہوئی۔ ڈی سی سوراب کے مطابق اس علاقے میں ووٹروں کی کل تعداد 57,339 ہے۔ ضلع بھر میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے۔

دوسری جانب بولان کے گورنمنٹ گرلز ہائی اسکول بھاگ پولنگ اسٹیشن پر پیپلز پارٹی کے امیدوار کے جعلی ووٹوں کے اندراج کے خلاف احتجاج پر پولنگ روک دی گئی۔ تاہم کچھ دیر بعد پولنگ کا عمل دوبارہ شروع کر دیا گیا۔

چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے پولنگ کے دوران خلاف ورزی کی صورت میں سخت کارروائی کا انتباہ دیا تھا۔

.

Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں